ملک :  سوریه

محمد راتب نابلسی،اہل سنت کے عالم ،۱۹۳۹م کو شام میں ایک علمی گھرانے میں پیدا ہوئے۔اس کے والد پڑھے لکھے آدمی تھے اور دمشق کی مساجد میں درس پڑھاتے تھے اور خطبہ دیتے تھے،وہ ایک بہت بڑی لائبریری کے مالک تھے جس کے موجودہ وارث اس کا بیٹا محمد ہے۔ محمد راتب نابلسی نے اپنی  پرائمری اور سیکنڈری تعلیم دمشق کے سکولوں سے  مکمل کی  اور اس کے بعد وہ اساتذہ ٹریننگ سنٹر چلے گئے اور ۱۹۵۶ م میں وہاں سے فارغ التحصیل ہوگیے۔کچھ عرصے بعد  دمشق کالج برای ادبیات میں داخلہ لیا اور وہاں  ادبیات  عرب  میں تحصیل شروع کردی یہاں تک کہ ۱۹۶۴ میں وہاں سے فارغ تحصیل ہوگیے۔۱۹۹۰م میں ڈبلن یونیورسٹی سے تربیت  میں پی ایچ ڈی مکمل کرلی۔

وہ الازہر یونیورسٹی،دمشق یونیورسٹی اور طرابلس یونیورسٹی میں عقائد، ادبیات عرب اور تربیت اسلامی پڑھاتے رہے ہیں۔دمشق کی بہت ساری مساجد میں خاص طور پر مسجد جامع شيخ عبد الغني نابلسي میں  منبر پر بھی جلوہ افروز ہوئے اور  خطبہ دیا اور بہت سارے موضوعات میں جیسے عقائد اسلامی، تفسیر، حدیث، فقه، سیره، زبان عربی و اصول اور دعوت کی ٹیکنیکس پر لیکچر دئے۔

محمد راتب نابلسی کا چہرہ عرب زبانوں کے لئے آشنا ہے چونکہ وہ ۲۰ سے زیادہ ٹی وی چینلز پر مختلف پروگرامز کرچکا ہے، انہوں نے اپنی متعدد تقاریر کے دوران وہابیت کے فکری انحرافات کے بارے میں  متنبہ کیا ہے۔حضرت محمد مصطفیٰ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے میلاد مبارک میں شرکت اورتقریریں کرنا اور خطبے دینا محمد راتب نابلسی کے ریگولر کاموں میں شامل ہے۔اسی طرح سائٹ النابلوسی انسائکلو پیڈیا میں   بعض وہابی عقائد کو اس نے رد کیا ہے۔

محمد راتب نابلسی نے بطور مولف بھی بے شمار کارنامے انجام دئے ہیں اور اب تک اس کی کئی کتابیں مارکیٹ میں آچکی ہیں۔ان میں سے کچھ آثار مندرجہ ذیل ہیں:

  1. . من أدب الحياة
  2. ۲. نظرات في الإسلام
  3. ۳. تأملات في الإسلام
  4. ۴. الهجرة
  5. ۵. الإسراء والمعراج
  6. ۶. الله أكبر
  7. ۷. كلمات مضيئة ولقاءات مثمرة مع الشعراوي
  8. ۸. موسوعة الأسماء الحسنى
  9. ۹. موسوعة الإعجاز العلمي في القرآن والسنة / آيات الله في الآفاق ، آيات الله في الإنسان
  10. ۱۰. ومضات في الإسلام
  11. ۱۱. مقومات التكليف
  12. ۱۲. الرد على البابا
  13. ۱۳. رسائل من نور
  14. ۱۴. نداء الله للمؤمنين
نام
نام خانوادگی
ایمیل ایڈریس
ٹیکسٹ