حوالہ :  جنگ

 کابل(اے ایف پی)افغانستان میں ہونےوالے ایک کار بم حملے کے نتیجے میں رکن پارلیمنٹ خان محمد وردک زخمی ہوگئے،ادھر افغان صدر اشرف غنی نے دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے اس حملے پر ردعمل میں کہا کہ ایسے واقعے سے امن کا موقع خطرے میں پڑ سکتا ہے۔وردک کے پانچ محافظ بھی اس حملے میں زخمی ہوئے ہیں۔اے ایف پی کے مطابق کابل میں اتوار کو کار بم حملے کے نتیجے میں رکن پارلیمنٹ کو نشانہ بنایا گیا جس کی ذمہ داری داعش نے قبول کی ہے۔وزیرداخلہ مسعود اندرابی کے مطابق حملے میں 9 افراد ہلاک جبکہ دیگر 20 زخمی ہوئے ہیں۔سیکورٹی ذرائع کے مطابق کار بم حملہ کابل کے مغربی حصے میں ہوا،دھماکہ اتنا شدید تھا کہ اس سے اطراف میں موجود گھروں کو بھی نقصان پہنچا ہے۔رکن پارلیمنٹ وردک کے ایک ساتھی نے بتایا کہ ان کے قافلے کو سفر کے دوران نشانہ بنایا گیا۔دوسری جانب افغان صدر اشرف غنی نے دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ شہریوں کو نشانہ بنانے سے امن کا موقع خطرے میں پڑ سکتا ہے۔

 
 
نام
نام خانوادگی
ایمیل ایڈریس
ٹیکسٹ