اندراج کی تاریخ  9/23/2019
کل مشاہدات  111
تکفیری گروہ داعش ایک ایسے گروہ کے عنوان سے ابھرا جس کے سر پر خلافت کا بھوت سوار تھا، اور مخلتف ممالک سے تبلیغ کے زریعے طاقت جمع کر کے ایک عالمی حکومت تشکیل دینے کے درپے تھا۔ داعش نے اپنی تبلیغات میں کہا: اس کی حکومت وہی حکومت ہے جسکا وعدہ اللہ اور پیغمبر (ص) نے کیا ہے جو سرزمین دابق میں صلیبیوں کا مقابلہ کرے گی۔ اور ایک سخت جنگ کے بعد انہیں شکست دے گی۔ اور اسلام کو وسعت دیگی۔  ہر جگہ داعش كا پرچم لہرايا  جائے گا اور دنیا کے تمام لوگ اس پرچم کے سائے تلے سکون واطمئنان کے ساتھ زندگی بسر کرینگے۔  
حوالہ :  الوہابیۃ علمی ویب سائیٹ

داعش اپنے اقدامات کو آگ کی وہ چنگاریاں سمجھتی ہے جو نشر اسلام، ایجاد امنیت اور سکون کے لیئے شعلہ ور ہوگئی ہیں۔ جس طرح ابو مصعب زرقاوی نے عراق میں سرگرم تکفیری لشکر سے خطاب کرتے ہوئے کہا: " هاهي الشرارة قد انقدحت في العراق وسيتعاظم أوارها -بإذن الله- حتى تحرق جيوش الصليب في دابق". یہ وہی چنگاریاں ہیں جو عراق میں روشن ہوگئ ہیں اور اس کے شعلے بڑھتے جائینگے یہاں تک کہ دابق میں صلیبی لشکر کو جلا کر راکھ کر دینگے۔

یہ جملہ داعش کو اتنا اچھا لگا کہ اسے اپنے رسمی میگزین (دابق) کے پہلے صفحے پر لکھ دیا۔ اور داعش نے اس جملے پر اعتماد کرتے ہوئے اپنے مشن کے لیئے ایک ایسا طریقہ كار اختیار کیا جسکے آثار آج عراق اور شام میں نظر آرہے ہیں۔ داعش کے زیر تسلط علاقوں کی تصاوير اور ویڈیوز کو دیکھنے سے یہ بات روز روشن کی طرح ظاہر ہوتی ہے کہ کس طرح داعش کے تکفیریوں کی آگ کے شعلوں نے مسلمانوں کی جان ومال اور شہادتین (کلمہ) پڑھنے والوں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔ اور کس طرح اسلامی آثار کو خراب کیا، اور كس طرح خدا کے انبیاء جیسے نبی یونس اور پیغمبر کے اصحاب گرامی جیسے حجر بن عدی کی بڑی توہین کی۔

جن شعلوں کی ابو مصعب نے بات کی تھی انہوں نے  نہ فقط صلیبيوں کے دامن کو نہ چھوا اور اسلامی اقتدار کا سبب نہ بنا بلکہ جہاں تک ممکن ہوا مسلمان اور انکے اموال کو  اپنی آگ میں جلا دیا۔ اور آج یہ آگ جسکو اپنی میراث قرار دیا تھا وہ عراق اور شام  کے صحرا ہیں۔ اور اس نے اسلام کے چہرے کو بگاڑا دیا جسکی وجہ سے نہ تنہا اسلام نہیں پھیلا بلکہ اسلام کو خوفناک بھی بنا دیا۔

جن صلیبیوں کو اپنی آگ میں جلانے کا ارداہ کیا تھا آج وہ خود داعش کے مشن کو اسلام کے خلاف ایک اسلحے کے طور پر استعمال کر رہے ہیں۔ اور میڈیا وار میں اس سے خوب استفادہ کر رہے ہیں۔ اور اسلام کے پھیلاو کو روکنے کے لیئے اس سے فائدہ اٹھا  رہے ہیں۔

رائٹر: اکبر لطفی

ترجمہ: مظاہر علی

 [1] - ابو مصعب زرقاوی، الارشیف الجامع لکلمات الشیخ ابی مصعب الزرقاوی، ص80

اہم کلمات:        داعش دابق   عراق   سوريا

لنك: http://yon.ir/m7ijK

 

نام
نام خانوادگی
ایمیل ایڈریس
ٹیکسٹ